پاکستان کی مشہور اداکارہ مہوش حیات کی بالی ووڈ اور ہالی ووڈ پر تنقید

پاکستان کی مشہور اداکارہ مہوش حیات نے ان دونوں فلم انڈسٹریز میں پاکستان کا منفی تشخص پیش کرنے پر آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے اسے مسلمانوں کے خلاف نفرت کا پرچار قرار دیا۔ پاکستان کی مشہور اداکارہ مہوش حیات نے اپنے انٹرویو کا ایک مختصر ویڈیو کلپ سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹرپرشیئر کیا ہے۔

پاکستان کی مشہور اداکارہ مہوش حیات نے امریکی ٹی وی ‘‘اسکائی نیوز ‘‘ مارننگ شو میں شرکت کی جہاں ان کا کہنا تھا کہ ہالی ووڈ اور بالی ووڈ کی فلموں میں پاکستانیوں کو انتہائی منفی طریقے سے پیش کیا جانا نا بہت بڑی نہ انصافی ہے۔ پاکستان کی مشہور اداکارہ مہوش حیات کے مطابق ان دونوں فلم انڈسٹریز کے اس اقدام سے مسلمانوں کے خلاف نفرت اور اسلامو فوبیا میں اضافہ ہوا ۔

پاکستان کی مشہور اداکارہ مہوش حیات نے کہا کہ سینما کے ذریعے ہمیشہ پاکستانیوں کو ہی ولن کے روپ میں پیش کیا گیا، انہیں پاکستانوں کو ہی دہشتگرد دکھایا جاتا ہے جنہوں نے ہاتھ میں بہت بڑی بڑی بندوقیں پکڑی ہوتی ہیں اور ان کی سب خواتین پردے میں ہوتی ہیں۔ پاکستان کی مشہور اداکارہ مہوش حیات نے مطالبہ کیا کہ فلموں میں پاکستانیوں کا صحیح تشخص اجاگر کیا جانا چاہیے۔ ناروے میں بھی مشہور اداکارہ مہوش حیات نے اپنے خطاب کے دوران بھارتی فلموں کو اس حوالے سے تنقید کا نشانہ بنایا تھا۔

اس سے قبل پاکستان کی مشہور اداکارہ مہوش حیات نے امریکی نشریاتی ادارے ’’سی این این‘‘ میں تحریر کردہ اپنے مضمون میں بھارتی اداکارہ پریانکا چوپڑا کو اقوام متحدہ کے ذیلی ادارے کی سفیر برائے خیرسگالی ہیں، یہ ان کو یہ احساس دلایا تھا کہ وہ امن پھیلانے کی ذمہ دارہیں۔

مسئلہ کشمیر پرپوچھے جانے والے جانے والے سوال کے جواب میں بھارتی اداکارہ پریانکا کی جانب سے صحافی کو جھاڑنے پر پاکستان کی مشہور اداکارہ مہوش حیات نے کا موقف تھا کہ پریانکا کسی بھی سنگین مسئلے پر بات کرتے وقت بطور بھارتی نہیں بلکہ عالمی شخصیت کے طور پر بات کرنی چاہیے۔ انہوں نے امریکا میں بیٹھ کر بھی عام بھارتی کی زبان بولی جبکہ انہیں دونوں ممالک (آندیا اور پاکستان) کے درمیان نفرتوں کے پرچارکے بجائے امن وانسانیت کا درس دینا چاہیے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں